بلدیہ بارسلونا ایسے وعدے وعید نا کرے جن پر عمل کرنا ممکن نا ہو، سیودادانس کے صدر البرٹ ریویرا کی ٹیکسی ہڑتال پر پریس کانفرنس

بارسلونا(سید شیراز)سیاسی جماعت سیودادانس کے صدر البرٹ ریویرا نے بلدیاتی(اجنتامنت) سطح پر vtc کے معاملے پر اختیارات منتقل کرنے کی مخالفت کر دی۔انہوں نے اپنے بیان میں اس بات پر زور دیا ہے کہ اجنتامنت کو لوکل سطح پر قوانین میں تبدیلی کا حق نہیں دینا چاہیے ۔بصورت دیگر حکومت کو 50 مختلف قوانین دیکھنے کو ملیں گے ۔
انہوں نے مذید کہا کہ کیا کوئی یہ خیال کر سکتا ہے کہ “(ادا کولاو) اور (مانیولا کارمین) مئیر بارسلونا اور مئیر میڈرڈ اپنے قوانین بنایئں اور یہ مسئلہ کا حل ہو گا ہر بلدیہ کا جو دل میں آئے وہ قانون اپنائے۔اسکے برعکس انہوں ایسے قانون پر زور دیا جو مارکیٹ کے بیلنس کو گارنٹی کرئے اور ایسے قومی قانون کو برقرار رکھے جو یورپین قوانین سے مطابقت رکھتا ہو۔ریویرا نے یہ بات بہت واضح انداز میں کہی ہے کہ وہ ہر ایسے کمیشن کی حمایت کریں گے جو نیشنل سطح پر ٹیکسی ایسوسی ایشن اور وی ٹی سی کے مابین قانون سازی پر ہو جس میں دونوں حریف متوازی طور کوئی ایسی قانون سازی کر سکیں جو برابری کی سطح پر ہو۔ اور جو جاری شدہ لائسنس پر پابندی یا کینسلیشن پر مبنی نا ہو۔
پریس کانفرس سے خطاب کرتے ہوئے البرتو ریویرا نے منسٹر ٹرانسپورٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس معاملہ پر اٹھائے جانے والے تمام اقدامات اور ایکشنز کی تفصیل اپوزیشن پارٹی کو دیں تاکہ کسی ایک نقطہ پر باہمی اتحاد ہو سکے۔مذید براں انہوں نے اجنتامنت دی بارسلونا کو کہا ہے کہ ایسے وعدے وعید نا کرے کہ جن پر عمل کرنا ممکن نا ہو۔اور اس کے ریفرنس کے طور پر حالیہ دنوں (ley colau) کا حوالہ دیا ہے جسے بعد ازاں عدالت کی طرف سے معطل کر دیا گیا تھا۔
ریویرا نے پیدرو سانچز کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے یہ بھی کہا کہ وہ ماریانو راخوئی کی طرح حکومت نا چلائیں۔ ” کہ جس نے کچھ بھی نا کیا”شہریوں کے حقوق پر بات کرتے ہوئے انہوں نے ہڑتال کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ۔ اور کہا کہ یہ شہری کا حق ہے کہ پوری آزادی سے شہر میں گھوم پھر سکے ۔جبکہ ایسا نہیں ہے۔ہڑتال کرنا ٹیکسی سیکٹر کا حق ہے لیکن وی ٹی سی گاڑیوں کی توڑ پھوڑ اور ڈائیورز کو ہراساں کیا جانا خود ٹیکسی سیکٹر کو داغدار کرنے کے مترادف ہے۔ جسکی البرتو ریویرا نے مذمت کی ہے۔