اسپین میں گرم موسم کی وارننگ جاری،آج یورپ کی تاریخ کا سب سے گرم دن ہو سکتا ہے

یورپ میں شدید گرمی کی لہر جاری ہے، حکومت نے ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے جنگلات میں آگ لگنے کا انتباہ جاری کر دیا ہے۔ آج کا دن یورپ کی تاریخ کا سب سے گرم دن بن سکتا ہے۔
یورپی ممالک اسپین اور پرتگال گرمی کی شدید لہر کی لپیٹ میں ہیں۔ان ممالک کے بعض علاقوں میں درجہ حرارت 40 سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا ہے جبکہ اسپین کے چالیس سے زائد صوبوں میں گرم موسم کی وارننگ جاری کی گئی ہے۔ دونوں ممالک میں خبردار کیا گیا ہے کہ گرم موسم کے نتیجے میں جنگلوں میں آگ لگنے کا خدشہ ہے۔
اسپین کے محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ موجودہ موسمی حالات غیر معمولی ہیں۔محکمےنے خبردار کیا ہےکہ غیر معمولی درجہ حرارت کے نتیجے میں شہریوں کی صحت کو بہت زیادہ خطرہ لاحق ہو سکتا ہے۔ اسپین کے شہر قرطبہ، اشبیلیہ اور طلیطلہ اس ہفتے گرمی کی وجہ سے سب سے زیادہ متاثر ہوئے جبکہ بعض علاقوں میں درجہ حرارت44ینٹی گریڈ تک پہنچنے کا توقع ہے۔اسپین میں اس ہفتے شدید گرمی کے باعث 40 اور 78 سالہ دو شخص ہلاک ہو گئے۔ماضی میں برطانیہ، اسکینڈنیا اور یونان میں دھوپ اور تپش کے باعث جنگلات میں آگ اور خشک سالی موسم گرما کی وجہ بنی۔
1977 ء میں یورپ میں سب سے زیادہ 48 ڈگری درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا تھا۔سال 2003 میں یورپ میں گرمی کی شدید لہر کے نتیجے میں 70 ہزار افراد ہلاک ہوگئے تھے۔2015 میں بھی یورپ میں بعض علاقے شدید گرمی کی لپیٹ میں رہے جس کے نتیجے میں فرانس میں پچاس افراد ہلاک ہوگئے