امریکہ کے مقامی انتخابات میں مسلمان امیدواروں کی ریکارڈ تعداد

امریکہ میں ماہِ نومبر میں متوقع مقامی انتخابات میں مسلمان امیدواروں کی ریکارڈ تعداد ، 90 سے زیادہ مسلمان امیدوار کھڑے ہوگئےامریکہ میں ماہِ نومبر میں متوقع مقامی انتخابات میں مسلمان امیدواروں کی ریکارڈ تعداد۔الجزیرہ کی خبر کے مطابق امریکہ میں 90 سے زیادہ مسلمان مقامی انتخابات کے لئے امیدوار کھڑے ہوئے ہیں۔
امیدواروں میں سے زیادہ تر ریپبلکن پارٹی سے ہیں اور 11 ستمبر 2001 کے حملے کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ انتخابات میں اتنی بڑی تعداد میں مسلمان امیدوار کھڑے ہوئے ہیں۔تجزئیہ نگاروں کے مطابق اس اضافے کی وجہ ٹرمپ کے مہاجرین مخالف بیانات اور ان کے سبب مسلمانوں کے مقامی اور قومی سطح پر اپنی نمائندگی کے لئے پالیسی میں داخل ہونے کی خواہش ہے۔انتخابات میں ریپبلکنز کی طرف سے مکیگن سے کھڑے ہونے والے 33 سالہ عبدالالسعید اگر آج متوقع ابتدائی انتخابات میں کامیاب ہوتے ہیں تو وہ ملک کے پہلے مسلمان گورنر بننے سے ایک قدم اور قریب ہو جائیں گے۔ریاست آریزون سے سینٹ امیدوار وکیل اور انسانی حقوق کے علمبردار’ دیدرا عبود’ اور واشنگٹن ڈی سی سے مقامی کمیشنوں کے لئے انتخابات لڑنے والے عامر قطب ایسے مسلمان امیدوار ہیں کہ جن کے کامیاب ہونے کی امید کی جا رہی ہے