ریپ کے الزامات: رونالڈو پرتگال کے فٹبال اسکواڈ سے باہر

ریپ کے الزامات کا سامنا کرنے والے عالمی شہرت یافتہ فٹبالر کرسٹیانو رونالڈو کو پرتگال کے آئندہ میچوں کے لیے ٹیم اسکواڈ کا حصہ نہیں بنایا گیا۔
واضح رہے کہ 2 روز قبل 34 سالہ سابق امریکی ماڈل کیتھرین مایورگا نے کرسٹیانو رونالڈو پر ریپ کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ 2009 میں لاس ویگاس میں عالمی شہرت یافتہ فٹبالر نے ان کا ریپ کیا تھا۔تاہم کرسٹیانو رونالڈو نے سابق ماڈل اور امریکی شہری کی جانب سے لگائے گئے ریپ کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے انہیں جھوٹا قرار دیا تھا۔رونالڈو کو آرام دینے کی غرض سے 11 اکتوبر کو پولینڈ میں ہونے والی یوئیفا نیشنز لیگ کے دوسرے میچ کے لیے اسکواڈ کا حصہ نہیں بنایا گیا۔اس کے علاوہ انہیں 15 اکتوبر کو گلاسگو میں اسکاٹ لینڈ کے خلاف ہونے والے میچ کے لیے بھی منتخب نہیں کیا گیا۔امریکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق پرتگال کے کوچ فرنینڈو سانتوز کا کہنا تھا کہ رونالڈو کو اگلے ماہ بین الاقوامی کھیلوں کے لیے بھی نہیں بلایا جائے گا۔
انہوں نے بتایا کہ یہ فیصلہ، رونالڈو، پرتگال کی سوکر فیڈریشن کے صدر اور ان کے درمیان ہونے والی ملاقات کے بعد لیا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ ’ہم نے فیصلہ کیا ہے اگلے 2 اسکواڈ سلیکشن تک رونالڈو ہمارے لیے آپشن نہیں ہوں گے۔سانتوز نے اس ملاقات کے حوالے سے مزید تفصیلات بتانے سے گریز کیا اور اس حوالے سے رونالڈو کے خیالات کے حوالے سے سوال پر بھی رائے دینے سے انکار کردیا اور کہا کہ ‘یہ معلومات نجی اور ذاتی ہیں‘۔ان کا کہنا تھا کہ ’ہمیں امید ہے کہ رونالڈو دوبارہ پرتگال کے لیے کھیلیں گے‘۔
واضح رہے کہ رونالڈو نے اس سے قبل ورلڈ کپ کے بعد ہونے والے پرتگال کے میچز میں بھی شرکت نہیں کی تھی۔سانتوز نے اس کی وجہ رونالڈو کے اطالوی کلب یوونٹس میں منتقلی بتائی تھی۔کرسٹیانو رونالڈو جو اپنے کیریئر کے اختتام کے قریب ہیں، پرتگال کے قومی ہیرو اور سب سے زیادہ مقبول شخصیت تصور کیے جاتے ہیں۔وہ پرتگال کے سب سے زیادہ تجربہ رکھنے والے کھلاڑی ہیں جنہوں نے 154 انٹرنیشنل میچز میں اپنے ملک کی نمائندگی کی جن میں 85 گولز کیے جس کے ساتھ وہ ملک کے لیے سب سے زیادہ گول کرنے والے کھلاڑی بھی ہیں۔