بھارت:تاج محل میں نماز پر پابندی لگا دی گئی

محکمہ آثار قدیمہ ہند نے تاج محل کے احاطے میں قائم مسجد میں نماز جمعہ کے علاوہ دیگر نمازوں پر پابندی عائد کردی ہےآگرہ ضلع کے سپرنٹنڈنٹ آرکیالوجی بسنت سورنکار کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کی جانب سے صرف مقامی باشندوں کو جمعہ کی نماز ادا کرنے کی اجازت ہے۔ مسجد کے امام سید صادق علی اور ان کا خاندا ن کئی عشروں سے امامت کے فرائض انجام دے رہا ہ اور وہ ماہانہ صرف 15روپے وصول کرتے ہیں۔
تاج محل انتظامیہ کمیٹی کے صدر سید ابراہیم حسین زیدی نے مقامی ذرائع ابلاغ سے بات چیت کرتے ہوئے بتا یا کہ مسجد میں نمازیں شروع سے ہی ادا کی جاتی رہی ہیں اب اسے روکنے کی وجہ سمجھ سے بالا ہے اور وہ اس کے خلاف آواز بلند کرینگے۔واضح رہے کہ انتظامیہ کی جانب سے جنوری 2018 میں غیر ملکیوں اور بیرون شہر کے لوگوں کے مسجد میں نماز پڑھنے پر پابندی لگا ئی گئی تھی۔