13 کلو گرام سونا پہن کر گھومنے والا ویت نامی تاجر

ہوچی من سٹی: ویت نام کا ایک تاجر ان دنوں سوشل میڈیا پر غیر معمولی طور پر مقبول ہے جو گھر سے سونا پہنے بغیر باہر نہیں نکلتا لیکن ٹھہریئے اس کے پہنے ہوئے سونے کی مقدار چند گرام نہیں بلکہ 13 کلو گرام ہے جس کی حفاظت کے لیے 5 باڈی گارڈز ہمہ وقت اس کے ساتھ ہوتے ہیں۔36 سالہ ٹران نوک فوب کی ویڈیو یوٹیوب پر بھی دیکھی جاسکتی ہے اور لاکھوں لوگ اسے دیکھ چکے ہیں۔ اس کے بعد خود ٹران نے بھی سونا پہنی ہوئی اپنی تصاویر بھی پوسٹ کیں یہاں تک کہ اس کی شہرت چین اور تھائی لینڈ تک پہنچ گئی۔ بعض لوگوں نے اتنے بڑی مقدار میں سونے پر اپنے شکوک کا اظہار کیا ہے جب کہ بعض کا خیال ہے کہ یہ سونا اصلی ہے کیوں کہ ویت نامی سونا پہننے کو خوش بختی کی علامت سمجھتے ہیں۔
ٹران کے زیورات میں شامل خاص موٹی زنجیر سے بندھا ایک پینڈنٹ قابل دید ہے جس کا وزن 5 کلوگرام ہے۔ دونوں ہاتھوں میں سونے کے کڑوں کا وزن 5 کلوگرام ہے جبکہ 500 گرام کی چار انگوٹھیاں بھی ہیں ساتھ ہی ٹران کمر کے گرد ایک کلوگرام کا پٹا بھی کبھی کبھار پہن لیتا ہے۔پانچ سال قبل تاجر نے زیورات پہننے شروع کیے اور ٹران کے بقول اس کی قسمت جاگنے لگی جس کے بعد اس نے مزید سونا پہننا شروع کردیا۔ اگلے مرحلے میں وہ سونے کی ٹوپی اور قمیص کا آرڈر دے چکا ہے۔اگرچہ پانچ کلو ہار سے تاجر کی گردن پر بوجھ پڑتا ہے اور ڈاکٹر اس سے منع بھی کرچکے ہیں لیکن ٹران اب بھی اسے گردن میں پہنتا ہے۔ ٹران ایک جانب تو پیٹرول کمپنی کا مالک ہے تو دوسری جانب وہ ڈانس کلب سے بھی رقم کماتا ہے۔