شینگن ملکوں میں فاخلے اور خروج کے وقت نیا کنٹرول سسٹم لاگو

پولیس اور سیکورٹی قوتوں کے مجرمین اور دہشت گردوں کو پکڑنے میں مدد ملے اور لا پتہ بچوں اور افراد کا کھوج لگانے میں آسانیاں آئیں گی یورپی یونین کے انسداد ِ دہشت گردی و جرائم کے خلاف جدوجہد میں اضافے کا ہدف رکھنے والے تقویت کے حامل شینگن انفارمیشن سسٹم (SIS)پر عمل درآمد شروع ہو گیا ہے۔یورپی یونین کونسل کی جانب سے جاری کردہ تحریری بیان کے مطابق نئے سسٹم کی بدولت سرحدی محافظین کو ایگزٹ اینٹری کے مؤثر کنٹرول میں مدد ملے گی، پولیس اور سیکورٹی قوتوں کے مجرمین اور دہشت گردوں کو پکڑنے میں مدد ملے اور لا پتہ بچوں اور افراد کا کھوج لگانے میں آسانیاں آئیں گی۔
علاوہ ازیں مشکوک افراد کا تعاقب کرنے اور اغوا کرنے کے واقعات کا سد باب کرنے میں یہ نظام بار آور ثابت ہو گا۔ شینگن علاقوں کے ممالک میں غیر قانونی طریقے سے قیام کرنے والے افراد کا تعین کرنے میں معاونت ملے گی اور ان افراد کی متعلقہ ممالک کو واپسی کے عمل میں سرعت آئے گی۔یہ نظام بیک وقت شنگن زون میں داخلے کی ممانعت ہونے والے افراد کے بارے میں معلومات بھی یکجا کرے گا۔کہا جاتا ہے کہ یہ نظام یورپی یونین کا وسیع اور مؤثر ترین انفارمیشن ٹیکنالوجی سسٹم ہو گا۔