سانحہ سانت روک،آتشزدگی کی شکار عمارت متاثرین کے لئے کھولی دی گئی،متاثرین نے اپنا بچا کھچا سامان نکال لیا

بارسلونا(دوست نیوز)سانحہ سانت روک آتشزدگی کی شکار رہائشی عمارت کو بدھ کی صبح ساڑھے دس بجے جزوقتی طور پر کھول دی گئی ۔اور متاثرین کو حفاظتی انتظامات کے ساتھ ان کے مکانوں میں جانے کی اجازت دی گئی ۔
پاکستانی اور دیگر ممالک کے متاثرین نے اپنا اپنا بچا کچھا سامان نکال لیا۔ کسی کا تو سارا سامان ہی جل کر راکھ ہو گیا اورکسی کا کچھ نا کچھ بچ گیا
میلان اٹلی سےآئے مہمان ذیشان آف لالہ موسی نے دوست نیوز کو بتایا کہ اس کے5000 یورو،پاسپورٹ، اٹلی کے کاغذات اور ہینڈ کیری بیگ مکمل طور پر جل گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں بارسلونا میں اپنے چچا کے پاس آیا تھا وہ ایک روز قبل پاکستان روانہ ہوگئے اور میں نے بھی پاکستان جانا تھا میری شادی تھی لیکن اب شادی کی تاریخ ملتوی کردی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی قونصلیٹ بارسلونا میں گیا تھا پاسپورٹ بنوانے کے لئے تو انہو ں نے ضروریکارروائی کر لی ہے اور کہا کہ پندرہ دن کے بعد پاسپورٹ بن جائے گا۔
دیگر متاثرین کا دوست نیوز سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ سب کچھ ختم ہوگیا۔اب کسی دوست کے گھر میں عارضی پناہ لیں گے۔اس دوران اپنا گھر ڈھونڈیں گے۔ جن اشیا کی انشورنس ہوئی ہے وہ تو مل جائیں گی لیکن جن کی نہیں ہوئی وہ سب ختم ہو گئیں ہیں۔ مقامی حکومت بھی کسی قسم کا تعاون نہیں کر رہی۔ نا مکان دے رہی ہے اور نا ہی کوئی نقصان پورا کر رہی ہے۔