گرجا گھروں میں راہباؤں کے ساتھ جنسی زیادتیاں

مسیحی برادری کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے اپنے دورہ امارات میں اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ راہبائوں کو پادریوں کی جانب سے جنسی زیادتیوں کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔’دی نیویارک ٹائمز‘ کے مطابق رومن کیتھو لک برادری کے روحانی پیشوا کا یہ پہلا مشرقی وسطیٰ کا دورہ تھا۔ اس تین روزہ دورہ میں پوپ فرانسس نے اس بات کی نشاندہی کی ہے کہ بیشتر پادری راہبائوں کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرتے ہیں اور انہیں خاموش رہنے کے لیے مجبور کرتے ہیں۔
صحافیوں سے گفتگو کےدوران پوپ فرانسس نے اپنے پیشرو ’بینڈکٹ‘ کی کاوشوں کو سراہا جس کے تحت ان اجتماعات کو بند کر دیا گیا جہاں راہبائوں کو جنسی زیادتیوں کا سامنا تھا۔واضح رہے کہ کیتھولک گرجا گھروں کی ایک بین الاقوامی تنظیم نے گزشتہ سال نومبر میں اس مسئلہ کا تذکرہ کیا تھا اور اس بات کی طرف توجہ دلائی تھی کہ راہبائوں کو جنسی زیادتی کے بعد اسقاط حمل کے لیےبھی مجبور کیا جاتا ہے جو کہ ان کے مذہب کے خلاف ہے۔