ورلڈ کپ کی خطرناک ٹیم ’ پاکستان‘ ہے، ظہیر عباس

پاکستان کرکٹ کے لیجنڈ بیٹسمین اور سابق کپتان ظہیر عباس نے کہا ہے کہ پاکستان ٹیم ورلڈ کپ کی خطرناک ٹیم بن کر سامنے آئی ہے۔پاکستان کی طرف سے ایک 100 فرسٹ کلاس سنچریاں بنانے رکھنے والے ایشین بریڈ مین ظہیر عباس کراچی سے لندن پہنچ گئے۔سابق کپتان نے برسٹل کائونٹی گرائونڈ پر 49 فرسٹ کلاس سنچریاں گلاسٹر شائر کائونٹی کےلئے بنائی ہیں۔وہ بدھ کو کراچی سے لندن پہنچے،ظہیر عباس اپنی کائونٹی کے گرائونڈ برسٹل پر جمعہ کو پاکستان اور سری لنکا کا میچ دیکھیں گے۔
ظہیر عباس نے 33سال پہلے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا تھا، لیکن ماضی کے عظیم بیٹسمین کی مقبولیت میں کمی نہیں آئی ہے۔کراچی کے جناح انٹر نیشنل ائر پورٹ پر ظہیر عباس سے لوگ ورلڈ کپ پر بات کر رہے تھے، سابق کرکٹ لیجنڈ نے برسٹل میں رنز کے ڈھیر لگائے ہو ئے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ پاکستان سری لنکا کو ہرا سکتا ہے، ماضی میں برسٹل کی پچ بیٹنگ کے لئے سازگار ہوتی تھی، اب بھی یہی لگتا ہے کہ پاکستان بڑا اسکور کرکے سری لنکا پر دباؤ ڈال سکتا ہے۔ظہیر عباس نے کہا کہ پاکستان ٹیم ٹورنامنٹ کی خطرناک ٹیم بن کر سامنے آئی ہے۔