ہسپانوی سفارت خانہ اسلام آباد میں سفیر محترم مانویل دوران اور قونصل جنرل سے پاک فریڈریشن اسپین کے وفد کی ملاقات،اہم مسائل پر بات چیت

اسلام آباد۔۔عمران ملک سے۔۔پاک فیڈریشن اسپین کے پلیٹ فارم سے ہسپانوی سفارت خانے میں، ایمبیسڈر مانویل دوران ،اور قونصل جنرل سے انتہائی اہم ملاقات اور روز مرہ اور پاکستانی کمیونٹی کو درپیش مسائل پر مثبت گفتگو اور ہسپانوی سفارت خانے کی جانب سے مسائل کے حل کے فورا اقدامات کی یقین دہانی کرائی گئی ۔اس موقعہ پر ،راجہ بابر ناصر سیکرٹری پاک فیڈریشن اسپین اپنے بھانجے کے ساتھ موجود تھے ۔مسلسل تین گھنٹے رہنے والی ملاقات میں ہمیں پانی پینے کا موقعہ بھی نہیں ملا اور ایسے مسائل سفارت خانے کے سامنے پیش کیے گئے جس سے خود ہسپانوی سفارت خانے کو بھی آگاہی نہ تھی ۔
ہماری ملاقات اور معلومات اور مسائل کے پیش کرنے کا طریقہ سفارت خانے کو بہت پسند آیا اور سفارت خانے کے لوگ حیران رہ گئے کہ واقعہ ہی ایسے مسائل سے ان کی خود آگاہی نہیں تھی ،یعنی معاملات نچلے طبقے تک ہی محدود تھے ۔اور تین گھنٹے گزرنے کے بعد بھی ہسپانوی سفارت خانہ مزید ٹائم دینے کو تیار تھا۔
کیا کیا مسائل پیش کیے گئے اور ان کا حل کیا ہے ۔
ٹی سی ایس ( TCS ) کا لوگوں سے انتہائی منفی رویہ اور ان کی ڈبل فیس اور لوگوں کو بار بار چکر لگانے کی شکایت کی گئی ۔
ایمبسڈر مانویل نے ،فوری ایکشن لیتے ہوئے ،ڈبل فیس ختم کرنے کا وعدہ اور اگلے ہی مہینے اس پر عمل درآمد کروانے کا حکم جاری کر دیا ۔
1۔ہماری شکایت کیا تھی ؟
جب آپ لوگ ایمبیسی اپنے کاغذات جمع کرواتے تھے ،تو آپ سے کاغذات کی تصدیق کی فیس لی جاتی اور ساتھ ساتھ کاغذات ایمبیسی کے جانے کی فیس اور پھر واپس لانے کی علیحدہ علیحدہ فیس وصول کی جاتی ،اب تصدیق شدہ کاغذات واپس لانے کی فیس انشاء اللہ ختم کر دی جائے گی اور جلد اس کے احکامات جاری کر دیئے جائیں گے ۔
ٹی سی ایس کی طرف سےزبردستی فارم فیلنگ اور فوٹو کاپی کی ڈبل فیس چارج کرنے پر بھی آواز اٹھائی گئی ۔
جس پر سفارت خانے نے فورا ٹی سی ایس کے ساتھ ایک ہنگامی میٹنگ کر کے اس مسلے کے حل کی یقین دہانی کرائی ۔
2۔جن دوستوں کی ہسپانوی شہریت پاس ہوگئی ان کے 14 سال سے کم عمر بچوں کے اسپانش پاسپورٹ کے کیسز ایمبیسی نے کیوں لینا بند کر دیئے ۔؟
جواب ،ایمبیسی نے اب تک ہم جتنے کیسز لیتے آرہے تھے ،وہ قانونی طور غلط تھا ،اور اس کے علاوہ ہر بندہ ہی اسپین ایمبیسی کا رخ کرنا شروع ہوگیا تھا ،اور ہمارے پاس عملہ کم ہونے کی وجہ سے بہت زیادہ رش بن گیا تھا اور جمع شدہ کیسز التواء کا شکار ہو رہے تھے ۔
سوال اب یہ ہسپانوی شہریت والے لوگ جن کے بچوں کی عمریں 14 سال کم ہیں اپنے کیسز کہا جمع کروا سکتے ہیں؟
جواب ۔اپنے متعلقہ رخسترو سول میں، جہاں پر آپ کی پادرونا منتو ہے ،یعنی رجسٹریشن ۔وہاں پر جمع کروا سکتے ہیں یا کسی وکیل سے رابط کر لیں ۔
سوال ،14 سے اوپر اور 18 سے کم بچوں کا کیا بنے گا ،یا جن کی عمر 18 سال سے کم تھی جب ان کے والدین نے حلف اٹھایا اور اب عمر 18 سال سے زیادہ ہو چکی ہے ان کے کیسز کہا جمع ہونگے؟
جواب ،ایسے تمام کیسز اسپین ایمبیسی ہی لے گی کیونکہ اس کے لیے کسی قسم کے اجازت نامے کی ضرورت نہیں اور 14 سے اوپر والے بچے کو خود پیش ہونا پڑتا ہے ،اس لیے اسپین ایمبیسی ایسے کیسز کو ہینڈل کرے گی ۔
3۔ اسپانش شہریت رکھنے والے اور پاکستانی شہریت رکھنے والے میاں، بیوی کا نکاح کہاں رجسڑرڈ ہو گا ؟
اسپین ایمبسی ایسے کیسز نہیں لیا کرے گی ،ایسے لوگ اپنے متعلقہ رخسترو سول رابطہ کرے ،یا رخسترو سینترال میڈر رابطہ یا اپنے کسی وکیل سے رابط کریں ۔
سوال ،اسپانش نکاح نامہ اسپین جمع کروانے کے بعد ،میاں یا بیوی کے انٹرویو میں اتنی تاخیر کیوں کی جارہی ہے ؟
جواب، یہ سارا کچھ رش زیادہ اور عملہ کم ہونے کی وجہ سے ہو رہا ہے ،ایمبیسی بڑی تیزی سے ان پر کام کر رہی ہے ۔اور بہت جلد ایسے کیسز نبٹا دیئے جائیں گے ۔
سوال ۔شہریت رکھنے والے کے ہاں کوئی بچہ پیدا ہوتا تو کیا کیا جائے ؟
جواب ۔اپنے متعلقہ رخسترو سول سے رابط کیا جائے ۔
4۔ جب ایمبیسی کوئی ڈوکومنٹس مانگتی ہے ،جیسے لیٹ اندراج ،نکاح نامے میں مسائل، اس کی ڈگری کے لیے اور پولیس سرٹیفیکٹ کے لیے جو ٹائم دیا جاتا ہے وہ صرف دس دن بہت کم ہے ؟
جواب ۔ اس میں ہم کچھ نہیں کر سکتے ،یہ ایک قانون ہے اور ہم اس کے آگے بے بس ہیں،
سوال۔اس کا کوئی حل ؟
جواب ہم کوشش کریں گے اپنے طور پر 10 سے 20 دن اور دے دیئے جائیں، لیکن قانونی طور کوئی لیٹر جاری نہیں کریں گے ،ٹائم دس دن ہی گنا جائے گا ۔
5۔لاہور والی مہر میں پروٹوکول آفیسر کی آر (R) کی غلطی وجہ سے ہزاروں ڈوکومنٹس کیوں واپس کیے گئے ؟
جواب ۔ہم نے بروقت فارن آفس لاہور کو اطلاع دے دی تھی ،اور مہر تبدیل کرنے تک ہزاروں ڈوکومنٹس ہمارے پاس آچکے تھے، ہم کوئی ایسے ڈوکومنٹس کی تصدیق نہیں کرتے جس پر تھوڑا سا بھی شک پڑ جائے ،فرض کریں وہ مہر غلط ہوتی اور اپنے پاس سے بنائی گئی ہوتی ،تو ساری ذمے داری ایمبیسی پر آجانا تھی ۔
6۔فیملی ویزہ دینے اتنی تاخیر کیوں ۔؟
جواب ،ہم نہیں چاہتے کسی قسم کی تاخیر ہو ،لیکن ہمارے پاس عملہ کم ہونے کی وجہ سے ایسا ہو رہا ہے ،اور اس میں ہم کچھ نہیں کر سکتے ۔یہاں پر ایمبیسڈرڈ نے تمام ایسوسی ایشن کو درخواست کی ہے ،کہ وہ حکومت اسپین کو مجبور کریں، تاکہ ایمبیسی کا عملہ بڑھایا جا سکے اور ہم تمام کیسز با آسانی ٹائم پر حل کر سکیں ۔
7۔جن بچوں کی اسپانش پاسپورٹ اور نکاح نامے تاخیر کا شکار ہیں، اور ان کو 3 سے 4 سال ہوچکے ہیں ان کا کوئی حل ؟
جواب ۔ بہت جلد ایسے کیسز نبٹا دیئے جائیں گے ۔
8 ۔ کاروباری اور اسپین کا وزٹ ویزہ کیوں ریجیکٹ کر دیا جاتا ہے ؟
ایسے لوگ ہمارے یورپین معیار پر نہیں اترتے اور 90 % لوگ واپس نہیں آتے ۔
9۔پاک فیڈریشن کی کاروباری کونسل ،اسپین اور پاکستان میں، ایک دوسرے کے ساتھ باہمی تعاون کاروبار کو ایک سے دوسرے ممالک میں وسعت اور دلچسی لینے حضرات کو ویزہ پالیسی میں نرمی چاہتی ہے ؟
جواب ،ہم بھی یہی چاہتے ہیں، لیکن اس کے لیے ہمیں ایک دوسرے کا اعتماد بحال کرنا ہوگا ،اور اس ویزہ کی آڑ میں دھندہ کرنے والوں کو بے نقاب کرنا ہوگا ۔
10۔دو نمبر ٹرانسلیشن کی وجہ کیسز کا ریجیکٹ ہونا اور اسلام آباد آبپارہ میں مافیا کے ہاتھوں بے وقوف بننے والوں کے ذریعے اپنے کیسز ریجیکٹ کروانے والوں کے ساتھ زیادتی کا ازالہ کیسے کیا جائے، ؟
جواب ۔ لوگوں کو چاہئے کے ایسے لوگوں سے ٹرانسلیشن کروائیں جو با اعتماد ہیں اور ،ٹی سی ایس کے آگے پیچھے گھومنے والے مافیا ایجنٹ حضرات سے بچیں، اپنے کیے آپ لوگ خود ذمے دار ہیں۔ ہمارے پاس کافی شکایتیں ہیں، لوگ اسلام آباد اور آبپارہ میں بیٹھ کر غلط ٹرانسلیشن کر رہے ہیں، اور کئی اسپانش آفیشل لوگوں کی مہر اپنے پاس سے لگا کر دے رہے ہیں ۔ایسے لوگوں کا سدباب ہم سب نے مل کرنا ہے، اور ایمبسی ایسے کاموں کو روکنے کے لیے ہر ممکن کوشش کرے گی ۔لیکن لوگوں سے اپیل ہے اپنے اعتماد والے لوگوں سے ٹرانسلیشن کروائیں اور ایجنٹ مافیا سے بچیں ۔