صادق آباد کے قریب ٹرین حادثہ، جاں بحق مسافروں کی تعد 16 ہوگئی

صادق آباد کے قریب راولپنڈی سے کوئٹہ جانے والی ٹرین اور مال گاڑی میں تصادم کے نتیجے میں جاں بحق مسافروں کی تعداد 16 ہوگئی۔حادثہ صادق آباد کے قریب ولہار ریلوے اسٹیشن پر پیش آیا۔ راولپنڈی سے کوئٹہ جانے والی اکبر ایکسپریس مال گاڑی سے ٹکرائی جس کے نتیجے میں 16 مسافر جاں بحق اور خواتین و بچوں سمیت 50 سے زائد افراد زخمی ہوئے۔ریسکیو حکام کے مطابق ملبہ سے مزید 5 لاشیں نکالنے کے بعد جاں بحق مسافروں کی تعداد 11 سے بڑھ کر 16 ہوگئیں۔حادثے میں ٹرین کا انجن مکمل تباہ ہوگیا جبکہ 6 بوگیوں کو بھی شدید نقصان پہنچا۔
حادثے کے بعد بوگیاں تباہ ہونے سے بڑی تعداد میں مسافر اندر پھنس گئے جنہیں ہائیڈرولک کٹر کی مدد سے بوگیاں کاٹ کر نکالا گیا۔ریلوے حکام کے مطابق ولہار ریلوے اسٹیشن پر مال گاڑی پہلے سے ٹریک پر موجود تھی کہ تیز رفتار اکبر ایکسپریس اس ٹریک پر آ کر ٹکرائی۔علاقہ مکینوں نے حادثے کے بعد اپنی مدد آپ کے تحت فوری طور پر امدادی کارروائیوں کا آغاز کیا۔ مسافروں کیلئے روہڑی سے ریلیف ٹرین بھی روانہ کردی گئی۔اے ایس پی صادق آباد حفیظ الرحمان بگٹی کے مطابق حادثہ کانٹا تبدیل نہ کرنے کے باعث پیش آیا۔ علی الصبح پیش آنے والے حادثے کے بعد اپ اور ڈاؤن ٹریک پر ٹرینوں کی آمد ورفت بحال کردی گئی ہے۔
حادثے میں زخمی ہونے والے 46 زخمی مسافروں کو تحصیل ہیڈ کوارٹر صادق آباد اور 12 زخمیوں کو شیخ زید اسپتال رحیم یار خان منتقل کردیا گیا ہے۔ شیخ زید اسپتال میں ایمر جنسی نافذ کردی گئی۔مسافروں کا کہنا ہے کہ اکبر ایکسپریس مال گاڑی سے پیچھے سے ٹکرائی ۔ صبح سوا 4 بجے زوردار دھماکا ہوا پھر اندھیرا چھاگیا۔ مقامی لوگوں نے بروقت آکر مسافروں کی جانیں بچائیں ۔وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا ہے کہ مرکزی ٹریک پر ٹرینوں کی آمد و رفت معطل نہیں ہوئی۔ کراچی سکھر اور لاہور سے امدادی ٹرینیں روانہ کردی گئی ہیں۔وزیر اعظم عمران خان نے ٹرین حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر دلی دُکھ اور افسوس کرتے ہوئے زخمیوں کو بہترین طبی امداد فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے