پاکستان سپورٹس کلب بریشیاکے زیر اہتمام 16واں سالانہ رنگا رنگ جشن آزادی سپورٹس میلہ

بریشیا(دوست نیوز)پاکستان سپورٹس کلب بریشیاکے زیر اہتمام 16واں سالانہ جشن آزادی سپورٹس میلہ کا انعقاد ہوا۔اسپورٹس میلہ میں اٹلی بھر سے پاکستانی اور مشرقی پنجاب کے ہزاروں افراد نے شرکت کی، اور میلہ کو پنجابی رنگ میں رنگ دیا۔کرکٹ، فٹ بال، والی بال اور کبڈی کے شاندار اور جاندار مقابلے ہوئے اور بہترین کھیل پیش کرنے والوں کو شائقین نے دل کھول کر داد دی۔
اٹلی بھر سے مختلف شہروں سے پاکستانی قافلوں کی صورت میں میدان میں پہنچےچوہدری تجمل کھٹانہ،چوہدری مظہر چاند،سید سجاد بخاری،چوہدری محمد افضل تارڑ ایک بڑے قافلہ کے ساتھ جو کم وبیش 600 افراد پر مشتمل تھا جسے اٹلی کی تاریخ کا سب سے بڑا قافلہ قرار دیا جارہا ہے کے ساتھ جب پہنچے تو پاکستان سپورٹس کلب بریشیا کی انتظامیہ صدر آصف کامران گوندل،سرپرست اعلی حیات ماجرہ ،بانی ریاض ماجرہ،جنرل سیکرٹری ملک گلزار،نائب صدر اورنگزیب بھٹی،وائس چیئرمین ساجد عمران کدھر،ممبران صفدر میکن،محسن وڑائچ ،راجہ قادرداد،رفاقت حسین بھٹی ،امان اللہ وڑائچ معاون خصوصی اجمل خان گوٹریالہ،تجمل حسین کھٹانہ،،میاں آفتاب احمدکے علاوہ دیگر مہمانوں میں چوہدری محمد افضل تارڑ،چوہدری ساجد گجر عادوال،خالد چیمہ وارثی،چوہدری زیب بھٹی،چوہدری رفاقت بھٹی،ملک رضا وحید اور دیگر نےکی جانب سے ڈھول کی تھاپ پر پھولوں کی مالا ،گلدستوں اورپاکستان زندہ باد، پاکستانی کمیونٹی بریشیا زندہ باد کے نعروں سے پرتپاک استقبال کیا گیا۔
اسپیکر کے پی کے اسمبلی مشتاق غنی اور قونصل جنرل میلان ڈاکٹر منطور احمد نے میدان میں موجود لوگوں سے مختصر خطاب بھی کیا۔ مشتاق غنی نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہمیں پاکستان سے باہر رہتے ہوئے اتفاق اور اتحاد کا مطاہرہ کرنا چاہیئے جس کی آج سب سے بڑی مثال بریشیا میں نظر آئی، انہو ں نے کہا کہ آپ لوگوں کا طرز عمل ہی پاکستان کی سفارت کاری ہے۔ قونصل جنرل ڈاکٹر منظور احمد نے کہا کہ ایسے میلوں ٹھیلوں کی حوصلہ افزائی ہونی چاہیئے۔ جس سے پاکستان کی دیہی ثقافت کو فروغ ملے۔ انہو ں نے کہا کہ سفارت خانہ اور قونصل خانہ کی جانب سے بھر پور تعاون جاری رہے گا۔اس موقع پر چوہدری تجمل حسین کھٹانہ، چوہدری مظہرچاند،سید سجاد بخاری،فخر امام نے کہا کہ ہمارا مقصد پاکستان کے پرچم کو بلند کرنا ہے۔ آج کا میلہ جشن آزادی کے نام سے منایا جارہا ہے جس میں پاکستان کی کھیلوں کو پیش کیا جائے گا۔ تاکہ ہماری نسل اپنے ثقافتی رنگوں کو اپنا سکے۔
اسپورٹس جشن آزادی میلہ میں جتنے والی ٹیموں کو ٹرافیاں اور نقد انعامات دئیے گئے چوہدری آصف وڑائچ نے پاکستان اسپورٹس کلب کی انتظامیہ کو بہترین اور تاریخی میلہ کرانے پر 2500 یوروز دینے کا اعلان کیا۔
کبڈی مقابلوں میں پاکستان اسپورٹس کبڈی کلب نے میدان مارا، پہلا انعام خالد گوندل کھائی نے 1800 یوروز نقد اور ٹرافی دی۔دوسرا انعام چوہدری طارق دھوتھڑ 1200 یوروز اور ٹرافی دی۔
والی بال مقابلوں میں شیری کلب والی بال میلان پہلا انعام جیتا جسےعلی وڑائچ نے 1500 یورو نقد اور ٹرافی انعام دی اس کے علاوہ علی وڑائچ نے انتظامیہ کو میلہ کے بہترین انتظامات کر نے پر 1000 یوروز انعام دیا۔جبکہ والی بال کی رنر اپ ٹیم کو چوہدری عمران امرہ روم کا چوہدری اجمل کے نام پر1000یوروز اور ٹرافی کا انعام دیا گیا۔
کرکٹ اور فٹ بال کے مقابلے پاکستان اسپورٹس کرکٹ کلب اورپاکستان اسپورٹس فٹ بال کلب نے جیت لئے پہلے انعام میں نقد رقم اور ٹرافیاں دی گئیں۔
میلہ کو کامیاب بنانے پر خدمات دینے والی اہم سیاسی وسماجی شخصیات کو انتظامیہ کی جانب سے یادگاری شیلڈز سے بھی نوازا گیا۔
کبڈی مقابلو ں میں سکھ کمنٹیٹرنے سماں باندھا تو والی بال مقابلوں میں بھی پاکستانی کمنٹیٹر نے شائقین کو اپنی جانب متوجہ کئے رکھا۔
پاکستان کا دیہی مقبول کھیل والی بال کے زبردست مقابلوں نے میلہ کا سماں باندھ دیا، بڑی تعداد نے والی بال مقابلوں کو دیکھا اور کھلاڑیوں کے بہترین کھیل پر داد دیتے رہے۔پاکستان کا روائتی کھیل کبڈی جس میں مشرقی اور مغربی پنجاب کے شیرجوانوں کی شرکت نے چار چاند لگا دئیے کھلاڑیوں نے اپنے کھیل سے تماشائیوں کو محطوظ کیا۔ ایک بہت بڑی تعداد نے کبڈی میچ دیکھے اور کھلاڑیوں کو بہترین کھیل پیش کرنے پر خوب داد بھی دی جو تالیوں کے علاوہ نقد رقم کی صورت میں بھی دی گئی ۔پکوڑوں، جلیبیوں ،سبزیاں، میٹھے آم اور مشروبات کے اسٹال میلے کی رونق کو دوبالا کرتے رہے ۔
کامیاب میلہ کی خوشی میں آصف کامران گوندل،چوہدری تجمل حسین کھٹانہ اور چوہدری محمد اجمل گوٹریالہ کو یورپ بھر سے دوست احباب کی جانب سے مبارک بادوں کے پیغامات موصول ہو رہے ہیں۔