عالمی برادری بھارت کو مقبوضہ کشمیر میں قتل عام سے روکنے کیلئے فوری اقدام کرے، پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کا مطالبہ

لندن/ بارسلونا/ برسلز (دوست نیوز) بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں کلسٹر بموں کے استعمال اور نہتے عوام پر ظلم ڈھانے کے لیے مزید فوجی تعینات کرنے کے خلاف پاکستانی و کشمیری کمیونٹی نے شدید احتجاج کرتے ہوئے عالمی برادری سے صورت حال کا فوری نوٹس لینے اور بھارت کو مقبوضہ کشمیر میں قتل عام سے روکنے کے لیے فوری اقدام کا مطالبہ کیا ہے۔ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن یورپ کے چیئرمین چوہدری پرویز اقبال لوہسر نے بھارتی جارحیت اور جنگی جنون کی شدید مخالفت کرتے ہوئے او آئی سی اور اقوام متحدہ کو خطوط لکھ دئیے اپنے خطوط میں لکھا کہ بھارت معصوم کشمیریوں پر ظلم ڈھا رہا ہے قتل و غارت کا ایک بازار گرم کر رکھا ہے نوجوانوں کی نسل کشی کی جارہی ہے ،ندائے کشمیر ایسوسی ایشن بارسلونا کے صدر راجہ مختار احمد سونی نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان اور صدر ٹرمپ کی ملاقات میں کشمیر پر ثالثی کا کردار ادا کرنے کی امریکن صدر کی پیشکش نے بھارت کو پاگل کر دیا ہے جس کی پاداشت میں آج بھارت نے کلسٹر بم کاآغاز کیا اور ایک مرتبہ پھر قتل و غارت کا بازار گرم کر دیا جس سے کثیر تعداد میں کشمیریوں کو شہید کر دیا گیا ۔معروف کشمیری رہنما ملک محمد شریف نے کہا کہ بھارت نے کلسٹر بم اور کشمیریوں کی نسل کشی کا سلسلہ دوبارہ تیز رفتاری سے شروع کر دیا ہے جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ بھارت امن نہیں بلکہ خطے میں بربادی چاہتا ہے ،تحریک کشمیر اسپین کے رہنما ناصر شہزاد نے کہا کہ بھارت کے نزدیک امن اور خوشحالی نام کی کوئی اہمیت نہیں وہ صرف اور صرف جنگ چاہتا ہے جبکہ کشمیری حق خودارادیت چاہتے ہیں اقوام متحدہ کے قوانین کے تحت اپنا حق آزادی چاہتے ہیں