14؍ اگست کو پاکستانی پرچم کیساتھ کشمیر کا جھنڈا بھی لہرایا جائیگا، حکومت

اسلام آباد(دوست نیوز) وزیر اعظم کی معاون خصوصی اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ ہم خطے میں جنگ نہیں چاہتے لیکن مودی موجودہ دور کا ہٹلر ہے ،14اگست کوہر پاکستانی اپنے پرچم کے ساتھ کشمیر کا جھنڈا بھی لہرائے گا، مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے تحت ہونا چاہیے، جبکہ وزیر خارجہ شاہ محود قریشی نے کہا ہے کہ کشمیر کی آئینی حیثیت پر چین نے سلامتی کونسل میں حمایت کی یقین دہانی کر ادی۔ دورہ چین کے بعد پریس کانفرنس میں کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محود قریشی نے کہا ہے کہ کشمیر کی آئینی حیثیت پر چین نے سلامتی کونسل میں حمایت کی یقین دہانی کر ادی،چین نے ایک بار پھر مثالی دوست ہونے کا ثبوت دیا، میرے دورے کے دوران پاکستانی موقف کو پوری توجہ سے سنا گیا،بھارتی عزائم خطے میں امن تہہ و بالا کرنے کا باعث ہیں، مسئلہ کشمیر کا عوامی امنگوں کے مطابق حل چاہتے ہیں۔
دورہ شاہ محمو دکا کہنا تھاکہ میرا دورہ مکمل کامیاب رہا،چین نے دو ٹوک کہا ہے کہ وہ جموں کشمیر کو متنازع سمجھتا ہے ، چین مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھی ہے ، آج سر ی نگر اور لداخ میں لوگ باہر نکل رہے ہیں اور کشمیری بھارتی فیصلے کو مسترد کر رہے ہیں ان کا کہنا تھا ہم کشمیریوں کی حمایت جاری رکھیں گے۔ فردوس عاشق اعوان نے میڈیاسے گفتگو اور سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے بیان میں کہاکہ صرف مسلمان آبادی والی ریاست مقبوضہ کشمیرکا اسپیشل سٹیٹس ختم کرنا اس بات کا ثبوت ہے کہ مودی ہٹلر کی انتہا پسندانہ سوچ کو پروان چڑھایا جا رہا ہے، مودی کے غیر قانونی اقدام نے بھارت کے خود ساختہ الحاق کی دستاویز کو غیر موثر کر دیا اورکشمیر آج 26 اکتوبر 1947ء کی پوزیشن پر ہے