بھارت، لڑکی نے باپ کو دوست کیساتھ ملکر قتل کر دیا

بھارتی شہر بنگلور میں 15 سالہ لڑکی نے ’’آزاد زندگی‘‘ گزارنے کی غرض سے اپنے والد کو دوست کے ساتھ مل کر گھر میں ہی قتل کر دیا۔بھارتی ذرائع ابلاغ ٹائمز آف اِنڈیا کے مطابق اتوار کی صبح ساڑھے 10 بجے 15 سالہ لڑکی نے اپنے 19 سالہ دوست (بوائے فرینڈ) پراوین کے ساتھ مل کر 41 سالہ والد کو چھریوں کے وار سے قتل کیا اور لاش کو باتھ روم میں آگ لگا دی۔
پولیس نے پراوین کو اتوار کے دن ہی گرفتار کر لیا تھا جب کہ لڑکی بھی پولیس کی حراست میں ہے۔ قانون کے مطابق لڑکی کی عمر کم ہونے کی وجہ سے اس کی شناخت نہیں بتائی جا سکتی۔دورانِ تفتیش لڑکی نے باپ کو قتل کرنے سے متعلق انکشاف کیا کہ ’’میں اپنی آزادی واپس چاہتی تھی اس لیے یہ جرم کیا‘‘۔ پولیس بیان میں لڑکی نے بتایا میرے والد نہیں چاہتے تھے کہ پراوین سے تعلق قائم رکھوں اور اپنی پڑھائی پر توجہ دوں جب کہ مجھ سے موبائل فون لے کر انٹرنیٹ تک رسائی بھی محدود کر رہے تھے۔
پیر کے دن ڈپٹی پولیس کمشنر نے لڑکی کے بیان کی تفصیلات جاری کی۔ لڑکی نے بتایا ’’حال ہی میں اسکے والد کو معلوم ہوا کہ ہم دونوں کسی مال میں ملے ہیں جس پر والد نے بیلٹ سے مارا پیٹا‘‘۔لڑکا کلاس 10 اور لڑکی کلاس 7 میں پڑھتی ہے جبکہ دونوں ایک ہی اسکول میں زیرِ تعلیم ہیں۔ لڑکی کے والد جے کمار کا تعلق راجستھان سے ہے جو کہ پیشے سے بزنس مین تھا