سپین میں لیستیریوسس کے حوالے سے بین الاقوامی الرٹ جاری

بارسلونا(عاطف منیر)لسٹیریا سے ایک خاتون ہلاک اور 150 لوگوں میں اس وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے جبکہ 500 مشتبہ افراد پر تحقیقات جاری ہیں
*(Listeriosis)لسٹیریاکیا ہے
لیسٹرائیوسس یا لسٹیریا ایک سنگین انفیکشن ہے جو عام طور پر بیکٹیریا لیٹیریا کے زریعہ پھیلتا ہے یہ مونوسیٹوجینس سے آلودہ کھانا کھانے کی وجہ سے ہوتا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق ہر سال 1،600 افراد کو لیسٹرائیوسس لاحق ہوتا ہے ، اور لگ بھگ 260 افراد فوت ہوجاتے ہیں۔وزارت صحت کے مطابق زیادہ تصدیق شدہ کیسسز سپین کہ جنوب میں واقع اندلسیاAndalusia میں ہیں.
کاتالونیا میں 50 کہ قریب افراد اس وائرس کی وجہ سے داخل ہیں لیسٹرائیوس عام طور پر لیٹیریا بیکٹریا سے متاثرہ کھانا کھانے سے ہوتا ہے عام طور پر ہلکی بیماری کا سبب بنتا ہے تاہم یہ حاملہ خواتین کے لیے زیادہ خطرناک ہو سکتا ہے اب تک 23 حاملہ خواتین اس وائرس کی نشاندہی کہ بعد ہسپتال میں داخل ہیں قائمقام وزیر صحت ماریا لوئیسہ کارسیڈو نے بتایا کہ “معائنے اور تحقیقات سے معلوم کریں گے کہ کوتاہی کہاں ہوئی “اسی سال برطانیہ میں اسی وائرس کی وجہ سے 6 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔