بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے ہر سال کی طرح امسال بھی عظیم الشان پروگرامز،53قومیتوں کے افرادکی شرکت

بارسلونا(نمائندہ دوست)ایسوسی ایشن UNESCO،بلدیہ بارسلونا،اوبرا سوشیال لاکاشاء(l’Obra Social “la Caixa”) اورمذاہب کے درمیان مکالمہ کی تنظیم سپین نے آؤدیر (Audir) کے تعاون سے بارسلونا کے شہریوں اور بالخصوص غیر مسلم کمیونٹی کے ساتھ بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے ہر سال کی طرح اس سال بھی ایک عظیم الشان پروگرام منعقد کیا۔جس کا مقصد مسلم اور غیر مسلم کمیونٹی کے مابین محبت اور امن کے پیغام کو فروغ دینا ہے۔
جس میں دنیا بھر سے 53قومیتوں کے افراد نے حصہ لیااس دن کا اہتمام چار سال قبل کیا گیا جو ہر سال تواتر کے ساتھ منایا جاتا ہے اس دن کے حوالہ سے بلدیہ بارسلونا کا کردار بھی قابل تحسین ہے یہ دن مذاہب کے درمیان مکالمت اور ہم آہنگی کے لئے منایا جاتا ہے ۔اس تقریب میں مسلمان ہندو سکھ مسیحی بدھ یہودی اور دیگر مذاہب کے ماننے والوں نے شرکت کی اس موقع پر تقاریر نے مذہبی پیشواوں نے مذہبی رواداری برداشت اور تحمل کا درس دیا اور کہا کہ دنیا کا امن مذاہب میں روادری سے عبارت ہے مذاہب کو آپس میں ایک دوسرے کی مخالفت کرنے کی بجائے مدد کرنی چاہئیے
تقریب میں ہر مذہب کے مردو خواتین نے بھی شرکت کی اس موقع پر سیمینارز ورکشاپس اور دیگر سرگرمیاں سرانجام دی گئیں اور تمام مذاہب کے پیروکاروں نے اپنے علاقائی میوزک کے ساتھ ساتھ کھانوں کو بھی تواضع کے لئے پیش کیا ۔