پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی کے زیر اہتمام مظلوم کشمیری کیساتھ اظہار یکجہتی، پلاسا کاتا لونیا میں بھارتی جارحیت کیخلاف بھر پور احتجاج

بارسلونا(دوست نیوز)پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی کے زیر اہتمام مظلوم کشمیری بہن بھائیوں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے پلاسہ کاتا لونیا میں بھارتی جارحیت کیخلاف بھر پور احتجاج کیا گیاجس میں خواتین سمیت تمام سیاسی ، سماجی ، مذہبی تنظیمات کے نمائندگان کے علاوہ قونصل جنرل عمران علی چوہدری نے قونصل خانہ کے عملہ کے ہمراہ خصوصی شرکت کی، احتجاجی پروگرام کے آغاز میں قاری عبدالرحمن کی تلاوت کے بعد راجہ مختار سونی ،شفیق تبسم اور چوہدری عبدالغفار مرہانہ انڈیا دہشتگرد ، مودی دہشتگرد ، ہم آزادی چاہتے ہیں کے نعرے لگا کر شرکاء کو جوش دلاتے رہے ،
احتجاجی مظاہرہ سے مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کشمیر میں کرفیو لگا ہوا ہے کشمیری گھروں میں محصور ہیں اور ضروریات زندگی کو ترس رہے ہیں، بھارتی فوج کشمیر کے چپے چپے پر تعینات ہے ،احتجاج کرنے والے کشمیریوں کو گرفتار کر لیا جاتا ہے ۔ہم سب کو چاہیئے کاروبار کی نسبت کشمیر کاز کو ترجیح دیں ، مودی تم ایک دہشتگرد غنڈے ہو اور عنقریب کشمیر آزاد ہو کر رہے گا ، ہم نہتے کشمیر یوں کی مظلومیت کو محسوس کر سکتے ہیں ، بھارتی جارحیت کی پُرزور مذمت کرتے ہیں کشمیر اکیلا نہیں ان شاء اللہ وقت آنے والا ہے جب کشمیری آزاد ہوں گے ، کشمیر میں نماز پڑھنے کی اجازت نہیں مسجدوں کو تالے لگے ہوئے ہیں ، آئندہ پروگرام میں لوگوں کو ہماری بھر پورشرکت سے پتہ لگنا چاہیئے کہ ہم زندہ قوم ہیں ،

سپین میں خواتین کے حقوق سے متعلقہ تنظیم کی رُکن کارکن مسز کرستینا نے کہا کہ کشمیر میں کرفیو پر ہمیں تحفظات ہیں لوگوں سے معمول کے مطابق زندگی گذارنے کا حق نہیں چھینا جا سکتا ، معروف گلوکار جمی شیخ نے ظلم رہے اور امن بھی ہو کیا ممکن ہے تُم ہی کہو ملی نغمہ پیش کیا ، سابق گورنر کاتالونیا مونسرات گارسیا نے کہا کہ عالمی برادری کوشش کرئے اور محصور کشمیری عوام کو کرفیو جیسی اذیت سے نجات دلائے ، بھارت کے جارحانہ قبضہ کیخلاف پوری دُنیا کو آواز بلند کرنی چاہیئے ، احتجاجی پروگرام میں شرکاء نے پلے کارڈز اور بینر اُٹھا رکھے تھے