دو ووٹ کا سفر،تین انتخابات،اسپین کی پہلی مخلوط حکومت ،پیدرو سانچز وزیراعظم بن گئے

میڈرڈ(دوست نیوز)اسپین میں آج قانون ساز سوشلسٹ وزیراعظم پیدرو سانچیز کی وزارت عظمیٰ کی تصدیق کے لیے پارلیمان میں ووٹ دیا گیا۔ووٹنگ میں پیدروسانچز کو167 ووٹ اور 165 مخالفت میں ڈالے گئے،جبکہ 18 ووٹ اسکیراریپبلیکانہ کے غیر حاضر رہے۔اسپین کے کاتالونیا خطے کی علیحدگی پسند جماعت نے اس شرط پر گزشتہ روز کی ووٹنگ میں حصہ نہ لینے پر اتفاق کیا تھا کہ سانچیز حکومت بننے کے بعد کاتالونیا کے مستقبل پر ان سے مکالمت کریں گے۔ وزیراعظم بننے والےپیدروسانچز اسپین کی پہلی مخلوط حکومت کی قیادت کریں گے۔جسےصرف دو ووٹ کی سادہ اکثیریت حاصل ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پیدروسانچز بدھ کے روز اپنی کابینہ مکمل کرکے حلف اٹھا سکتے ہیں ۔مخلوط حکومت کو چونکہ واضح اکثیریت حاصل نہیں ہے اس لئے پارلیمنٹ سے بلز کی منظوری کے لئے دوسری اتحادی جماعتوں کے ساتھ تعاون کرنا پڑے گا ۔ موجودہ حکومتی اتحاد میں نئی سیاسی ابھرتی جماعت ووکس کی تیسری پوزیشن نے کردار ادا کیا ۔بائیں بازو کی جماعت پودیموس اس سے قبل اتحاد نہ کرسکی تھی ۔اسپین کے معاشی بحران نے نئی جماعتوں کو آگے آنے میں مدد دی ہے جبکہ اس سے قبل اسپین میں دو جماعتیں ہی انتخابات کا حصہ بنتی رہی ہیں۔