شادی کے دو ہفتوں کے بعد بیوی ’مرد‘ نکلی

کمپالا: (ویب ڈیسک) دنیا بھر میں اکثر ایسی خبریں پڑھنے کو ملتی ہیں جس کو پڑھنے کے بعد ہر کوئی ورطہ حیرت میں مبتلا ہو جاتا ہے، اسی طرح کی ایک خبر یوگینڈا سے آئی ہے جہاں پر امام مسجد کی شادی کے دو ہفتے کے بعد بیوی ’مرد‘ نکل آئی۔ یوگینڈا کے شہر کیونگا کی ایک مسجد کے امام کی دو ہفتے قبل شادی ہوئی، شادی کے دوہفتے کے بعد امام مسجد محمد مُتمبہ نے بیوی کو مرد پایا۔
خبر رساں ادارے کے مطابق بیوی نبوکیرا کے مرد ہونے کا انکشاف اس وقت ہوا جب بیوی کو متنبہ کے گھر سے کپڑے اور ٹی وی چوری کرنے پر پولیس نے حراست میں لیا ۔خلیج ٹائمز کے مطابق حراست میں لینے کے بعد پولیس کو ایک خط ملا جس میں امام مسجد کی بیوی کا مرد ہونے کا انکشاف ہوا۔ پولیس کے مطابق نبوکیرا کو پہلے بھی بطور خاتون گرفتار کیا گیا تھا۔ کیونکہ انہوں نے گرفتاری کے وقت حجاب اور لیڈیز سینڈل پہن رکھے تھے۔
تاہم خاتون پولیس افسر کے جانچ پڑتال کرنے پر نبوکیرا مرد نکلا۔ پولیس نے متاثرہ امام مسجد مُتمبہ کو آگاہ کیا کہ اس کی بیوی مرد ہے، جس کی شناخت 27 سالہ ریچرڈ کے نام سے ہوئی جس کے بعد امام مسجد کو شدید جھٹکا لگا۔ملزم نے بتایا کہ چوری کی غرض سے اس نے امام سے شادی کی تھی اور خاتون کا روپ دھار کر اس نے سب کو دھوکا دیا، دوران تفتیش ملزم نے گھاؤنے فعل میں معاونت کرنے والی رشتہ دار کا نام بھی بتایا جس نے شادی منعقد کرانے میں کلیدی کردار ادا کیا تھا پولیس نے ملزم کے بیان پر اس کی سہولت کار آنٹی کو بھی گرفتار کر لیا۔
پولیس نے خاتون بن کر امام مسجد سے شادی کرنے والے شخص کو گرفتار کر لیا ہے۔ انوکھی واردات کا یہ منفر واقعہ لوگوں کی توجہ کا مرکز ہے ۔ تاہم لوگوں کی جانب سے اس انوکھی واردات پر طنز ومذاق بھی جاری ہے۔