ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن اسپین نے بھارت کے 71 ویں یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طور پر منایا

بارسلونا(دوست نیوز)مقبوضہ کشمیر، لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف اور دنیا بھر میں موجود پاکستانی اور کشمیریوں نے بھارت کے 71 ویں یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طور پر منایا۔بارسلونا میں ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن اسپین کے زیر اہتمام بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج کیاگیا۔جس میں کشمیری وپاکستانی کمیونٹی نے شرکت کی۔اس موقع پر کشمیریوں کو حق خودارادیت سے محروم رکھنے پر بھارتی حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر بھارت مخالف نعرے درج تھے۔
اس سال کشمیری ایک ایسے موقع پر یوم سیاہ منایا جب مقبوضہ کشمیر میں لاک ڈاون کو 175 روز ہو چکے ہیں۔ بھارت کے یومِ جمہوریہ پر مقبوضہ کشمیر فوجی چھاؤنی میں تبدیل ہوگیا، جگہ جگہ بھارتی فوجی اہلکاروں کی اضافی نفری تعینات کردی گئی۔
احتجاجی مظاہرے سے ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن اسپین کے صدر کامران خان، ،پاک فیڈریشن اسپین کے صدر چوہدری ثاقب طاہر، پی ٹی آئی کے سینئر رہنما شہزاد اصغر بھٹی، سید فریاد حسین شاہ، محمد شفیق تبسم ،چوہدری ظہیر عاطف،معروف سماجی شخصیت خالد بیگ،چوہدری قربان،اور ڈاکٹر قمرفاروق نے خطاب کیا۔
مقررین نے کہا کہ ہندوستان اپنی جمہوریت پسندی کا ڈھنڈورا پیٹتا ہے اور کہا جاتا ہے وہ دنیا کی ایک بڑی جمہوریت ہے۔ انگریزوں سے آزادی حاصل کرنے والے ہندوستان نے جموںو کشمیر کے عوام کی آزادی کو چھین رکھا ہے اور مقبوضہ ریاست کو اپنی فوجی چھائونی میں تبدیل کر دیا ہے۔
دنیا پر جنت کا منظر پیش کرنے والے خطے کو قید خانہ بنا دیا ہے۔ جہاں معصوم عوام کا قتل عام جاری ہے اور اس سرزمین کو لہو لہان کر دیا گیا ہے۔مقبوضہ جموں و کشمیر میں لاکھوں لوگوں کو جو پہلے سے تاریخ کی طویل ترین پابندیوں کی زد میں ہیں،کریک ڈائون اور ناکہ بندیوں، گرفتاریوں کا شکار بنایا جاتا ہے۔ کشمیری ہر روز بھارتی ریاستی دہشت گردی کا نشانہ بنائے جاتے ہیں۔جنرل سیکرٹری ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن نعمان علی نے نظامت کے فرائض سرانجام دئیے ۔