ٹرمپ صحافی کے کرونا وائرس سے متعلق سوال پر طیش میں آگئے

وائٹ ہاؤس میں اہم پریس کانفرنس کے دوران صحافی کے سوال پر امریکی صدر ٹرمپ طیش میں آگئے اور سوال کا جواب دینے کے بجائے رپورٹر سے کہا کہ تم بہت برے صحافی ہو،جس پر کانفرنس روم میں موجود تمام افراد ہکا بکا رہ گئے۔
این بی سی کے رپورٹر پیٹر ایلکزینڈر بھی امریکی صدر کی کرونا وائرس سے متعلق ہونے والی پریس کانفرنس میں اگلی نشست پر براجمان تھے۔ الیکزینڈر سمیت کمرے میں موجود کسی شخص کے وہم و گمان میں بھی نہ تھا کہ اگلے ہی لمحے ایک مناسب سوال پر ٹرمپ کے ہاتھوں ان کی کھچائی ہو جائے گی۔پریس کانفرنس میں ٹرمپ نے حکومتی اقدامات اور کرونا وائرس سے متعلق گفتگو میں کہا کہ امریکی ادارے پروفیشنل ازم کے ساتھ اس وائرس سے نمٹ رہے ہیں۔
امریکا نے نئی مہلک وباء کورونا وائرس کے علاج کیلئے اینٹی ملیریا ڈرگ استعمال کرنے کی اجازت دیدی ہے۔ اینٹی ملیریا ڈرگ کی دستیابی کو یقینی بنانے کیلئے کوششیں کر رہے ہیں اور اس سلسلے میں فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کا کردار بہترین رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم اس ڈرگ کے استعمال کی منظوری کی مرحلے میں تھے اور منظوری مل گئی ہے انہوں نے یہ کام مہینوں کی بجائے فوری کیا۔صدر ٹرمپ نے یہ بھی کہا کہ وائٹ ہاؤس نے کرونا وائرس کے علاج اور ویکسین کی تیاری کیلئے سرخ فیتے کی رکاوٹیں ختم کردی ہیں۔

صحافی کی کھچائی
صدر ٹرمپ کی جانب سے عوام کو کرونا کے علاج کیلئے ملیریا کی دوا کے استعمال کا مشورہ دینے پر صحافی نے حیرانگی کا اظہار کرتے ہوئے پے در پے سوالات کر ڈالے۔ صحافی نے صدر ٹرمپ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ لوگوں سے کہہ رہے ہیں کہ ملیریا سے نمٹنے کی دوا کو کرونا وائرس کے خلاف استعمال کیا جائے؟ مگر حقیقیت یہ ہے کہ اس بات کا کوئی ثبوت ہی نہیں کہ آیا یہ دوا واقعی اثر کرے گی یا نہیں، جب کہ ابھی تک تو اس بات پر تحقیق ہی نہیں کی گئی کہ یہ دوا کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کو کھانے کیلئے خطرناک نہیں، ٹرمپ نے کہا کہ دیکھتے ہیں کہ یہ دوا کام کرتی ہے یا نہیں؟۔


صحافی نے پھر سوال کیا کہ پورے امریکا میں بسنے والے افراد اس وقت آپ کو دیکھ رہے ہیں اور ڈرے ہوئے ہیں۔ جس پر امریکی صدر ایک دم غصے میں آگئے اور صحافی پر بری رپورٹنگ کا الزام لگا ڈالا اور کہا کہ تم نے بہت نامناسب سوال کیا ہے۔ تم اپنے سوالات سے امریکیوں کو منفی پیغام دے رہے ہو، مجھے بتاؤ تم کس کیلئے کام کرتے ہو اور میں یہاں یہ بتانا چاہتا ہوں کہ یہ بہت بری رپورٹنگ ہے جو تم کر رہے ہو۔


صرف یہ ہی نہیں انہوں نے صحافی کی جانب انگلی سے اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایسی سنسنی خیزی کی کوشش پر تمہیں شرم آنی چاہیئے