کورونا کی وبا کے باوجود قونصلیٹ عملہ کمیونٹی کی خدمت میں مصروف عمل ہے، عمران علی

بارسلونا (جواد چیمہ) یوم پاکستان کے موقع پر قونصلیٹ جنرل آف پاکستان بارسلونا میں پرچم کشائی کی گئی۔ اس موقع پر قونصل جنرل عمران علی نےکہا کہ پاکستان قونصلیٹ کا عملہ ان کی سربراہی میں پچھلے ایک ماہ سے کرونا وائرس کی پھیلاؤ کے باوجود پاکستانی عوام کی دن رات خدمت کر رہا ہے۔ آج یوم پاکستان کے موقع پر بارش اور ایمرجنسی میں بھی ہم نے اپنا پرچم بلند کیا کیونکہ زندہ قومیں ہمیشہ اپنا پرچم سربلند رکھتی ہیں۔ قونصل جنرل نے اس موقع پر صدر پاکستان کا پیغام پڑھا کہ پاکستانی قوم اسی طرح اتحاد، ایمان اور تنظیم کے ساتھ کرونا وائرس یا کسی بھی بڑے چیلنج کا سامنا کر سکتی ہے اور انہیں ہمیشہ قائداعظم کی زندگی کو مد نظر رکھنا چاہئے۔ وزیر اعظم عمران خان نے اپنے پیغام میں کہا کہ ہماری قوم اتنی با ہمت ہے کہ وہ 2005 کے بڑے زلزلے اور باقی سانحات سے نکل کر انتہائی مضبوط ہو کر سامنے آئی ہے اور انہوں نے کشمیریوں کی جدوجہد کو سلام پیش کیا۔ قونصل جنرل نے کہا کہ بارسلونا کے ٹیکسی سیکٹر نے ایک بار پھر تاریخ رقم کی ہے جنہوں نے میڈیکل سٹاف کو فری سروس فراہم کی ہیں۔ اسی طرح پاکستانی سپر مارکیٹ کے مالکان نے لوگوں کو گھروں میں جا کر اشیائے خوردونوش فری فراہم کرنا شروع کر دی ہیں اور کمیونٹی لیڈران نے بے سہارا بچوں کو کئی روز تک اپنےگھروں میں رکھا جب تک انہیں متبادل فلائٹ نہیں ملی۔ اسی طرح ہمارے ہیلتھ پروفیشنلز نےکرونا کے مریضوں کی دن رات دیکھ بھال کے لئے خود کو وقف کیے رکھا جس کے نتیجے میں وہ خود بھی 14 دن کی آئسولیشن میں چلے گئے ہیں۔ اس سے پہلے بھی ہم نے ایسے امراض کا صبر و شکر کے ساتھ مقابلہ کیا ہے۔یہ کمیونٹی اور پوری قوم اس کروناوائرس کا مقابلہ کرے گی اس کے علاوہ بھی اگر کوئی مصیبت آئے گی تو اُس کا بھی مقابلہ کرے گی۔ قونصل جنرل نے اپیل کی کہ تمام احتیاطی تدابیر پر عمل کریں۔بےجا مجمع میں نہ جائیں۔ جب تک ایمرجنسی نہ ہو قونصلیٹ نہ آئیں۔ بزرگوں اور بچوں کو لے کر قونصلیٹ ہر گز نہ آئیں۔ اپنے ہاتھ دھوتے رہیں۔ کرونا وائرس ایک وباء ہے۔ خدارا اس کو سنجیدگی سے لیں اور احتیاط کریں۔ ابھی تک 12-13 متاثر پاکستانی اس وباء سے اللہ کے فضل و کرم صحت یاب ہو گئے ہیں اور پاکستانی کمیونٹی میں اس مرض سے کوئی موت نہیں ہوئی۔ اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔